تین یورپی ممالک کے خلاف یورپی کمیشن کی کارروائی

یورپی کمیشن نے مہاجرین کے مسئلے پر پولینڈ، ہنگری اور جمہوریہ چیک کے خلاف یورپی عدالت سے رجوع کر لیا ہے۔ ان تینوں ممالک پر الزام ہے کہ انہوں نے مہاجرین کو پناہ دینے کے معاملے میں یورپی یونین سے یکجہتی کا مظاہرہ نہیں کیا۔

 یورپی کمشنر برائے مہاجرین دیمترس اوراموپولس  نے برسلز میں بتایا کہ ایسے کوئی شواہد موجود نہیں ہیں، جن سے ثابت ہو سکے کہ یہ تینوں ممالک  سیاسی پناہ کے متلاشیوں کو پناہ دینے چاہتے ہوں۔ ستمبر 2015ء میں یورپی وزرائے داخلہ نے مشرقی یوپی ممالک کی مزاحمت کے باوجود ایک لاکھ بیس ہزار مہاجرین کی تقسیم کا فیصلہ کیا تھا۔

اس بارے میں ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ان تینوں ممالک نے مہاجرین کو پناہ دینے کے معاملے میں یورپی یونین سے یکجہتی کا مظاہرہ نہیں کیا۔ ہنگری اور پولینڈ تو آج تک مہاجرین کو اپنے ہاں قبول کرنے سے انکار کرتے ہیں تاہم چیک جمہوریہ نے سیاسی پناہ کے بارہ متلاشیوں کو پناہ دی ہے۔

Flaggen der EU

یورپی کمیشن نے مہاجرین کے مسئلے پر پولینڈ، ہنگری اور جمہوریہ چیک کے خلاف یورپی عدالت سے رجوع کر لیا ہے

 2015ء میں یورپ میں مہاجرین کے بحران کے موقع پر ہنگری، چیک جمہوریہ اور پولینڈ نے تعاون کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ اس کے بعد یورپی کمیشن نے ان تینوں ممالک کو اختیارات محدود کرنے کی دھمکی بھی دی تھی۔

موضوعات